اطہرمسعود کا کالم — ۔دیدۂِ بینا

Athar Masood Column – Dida -e- Bina

اسکی شلوار اتارو اپریل 22, 2017

Filed under: اطہر مسعود کا لم ۔۔۔ دیدہ بینا — Masood @ 1:52 شام

لوگوں نے شور مچا دیا ‘ یہ چور ھے’ …سمجھداروں نے کہا اس طرح بغیر ثبوت الزام لگانا جائز نہیہں عدالت سے فیصلہ کرایا جائے

ملزم نے کہا سب الزام جھوٹے ہیں میرے پاس کچھ نہیں ،میں عدالت مین پیش ہونے کو تیار ہوں …پانچ سمجھدار ترین ججوں نے مقدمہ سننا شروع

کیا ……فیصلہ ہوا تلاشی لی جاۓ …عدالتی اہلکاروں نے قمیض کی جیبوں میں ہاتھ ڈالا  بالکل خالی کچھ برآمد نہ ہوا ……..ججوں نے کہا جوتےاور جرا بیں اتار کر دیکھی جائیں ،ان میں سے بھی کچھ نہ نکلا ..حکم ہوا قمیض اتارو ،قمیض اترتے ہی شلوار کی جیب

میں نوٹ نظر آ گئے…… دو ججوں نے فورا فیصلہ کر دیا ‘یہ چور ہے’……..تین ججوں نے کہا …نہیں……اس کی شلوار بھی اتارو

……..!!!!!!!!

 

 

Advertisements
 

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

w

Connecting to %s