اطہرمسعود کا کالم — ۔دیدۂِ بینا

Athar Masood Column – Dida -e- Bina

اقوالِ زریں دسمبر 22, 2009

"جو لوگ میانہ روی اختیار کرتے ہیں، کسی کے محتاج نہیں ہوتے۔”
نبی کریم (صلی اللہ علیہ وآلٰہ وسلم)

جس کسی نے مجھے ایک لفظ بھی پڑھایا وہ میرا استاد ہے
(حضرت علی کرم اللہ تعالی وجہ)

دولت،رتبہ اور اختیار ملنے سے انسان بدلتا نہین اس کا اصلی چہرہ سامنے آجاتا ہے۔۔۔حضرت علی

"جو علم کو دنیا کمانے کے لیے حاصل کرتا ہے علم اس کے قلب میں جگہ نہیں پاتا۔”
امام ابو حنیفہ (رحمتہ اللہ علیہ)

"جب خلقت کے پاس آؤ تو زبان کی نگہداشت کرو”
حضرت لقمان علیہ السلام

اللہ تعالٰی نے اشیاء کی حقیقت کا علم تم سے چھپا لیا ہے، اس لیئے کوئی چیز تمہیں اچھی لگے یا نہ لگے، اس کے خلاف نہ کہو۔
(شیخ عبد القادر جیلانی)

بعض اوقات اللہ کا بندے کی درخواست کو قبول نہ کرنا بندے پر شفقت کی وجہ سے ہوتا ہے۔
(شیخ عبد القادر جیلانی)

دین کی اصل عقل، عقل کی اصل علم اور علم کی اصل صبر ہے، لہذا صبر کا دامن ہاتھ سے کبھی نہ چھوڑو۔
(شیخ عبد القادر جیلانی)

 ملنے کے صرف دو ہی معیار ہوتے ہیں ، خون ملتا ہو ، یا خیالات ملتے ہو

اللہ پاک سے دعا کیا کریں کہ

 آپ کی ہر دعا قبول مت ہو۔صرف وہی دعا قبول کی جائے جس میں بہتری ہو

خوش نصیب وہ ہے جو اپنے نصیب پر خوش رہے ۔۔

حضرت واصف علی واصف

سچائ انسانیت کا حسن ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جھوٹ دم گھٹنے والا دھوّاں ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

نیک نامی انسان کا زیور ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جھوٹ تمام گناہوں کی ماں ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
غصّہ قابل ترین انسان کو بے وقوف بنادیتی ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔
نادان لوگ دل کا چین لٹا دیتے ہیں دولت کیلئے جبکہ دانشمند لوگ دولت لٹادیتے ہیں دل کے چین کیلئے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

جو شخص تمہاری باتوں کو غور سے نہ سنے انہیں سننے کی تکلیف نہ دو۔۔۔۔۔۔۔۔۔
سب سے بڑا گناہ وہ ہے جو کرنے والے کی نظر میں چھوٹا ہو۔۔۔۔۔۔۔۔
جب یہ پتہ چل جاتا ہے کہ زندگی کیا ہے تو وہ بہت کم بچی ہوتی ہے۔۔۔۔۔۔۔
جو شخص نصیحت مان لے وہ بعض اوقات نصیحت کرنے والے سے بھی بڑا ہوتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

بخیل کے اندر وفا نہیں ہوتی ۔۔۔۔۔۔۔
حاسد کو کبھی راحت نہیں ہوتی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
تنگ دل کا کوئ دوست نہیں ہوتا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جھوٹے میں مروت نہیں ہوتی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔
خائن کبھی قابل اعتماد نہیں ہوتا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
بد اخلاق کے اندر محبت نہیں ہوتی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

 

انسان کو وہی ملتا ہے جس کی وہ کوشش کرتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ہر شخص کو چاہئے کہ سوچے اس نے کل کے لئے کیا بھیجا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔
اللہ نے موت اور زندگی پیدا کی تاکہ تمہاری آزمائش کرے کہ کون تم میں اچھے کام کرتا ہے۔۔۔۔۔۔۔
آج عمل ہے حساب نہیں،کل حساب ہوگا عمل نہیں۔۔۔۔۔۔۔۔
احسان کی خوبی یہ ہے کہ اسے جتایا نہ جائے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
وہ خوشی جو صرف اپنے لئے ہو بے کار ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
اپنے فن اور قابلیت سے کمانا تعریف کے قابل ہے۔۔۔۔۔۔۔۔

جہاد
جہاد ایک سعادت تھی مگر اسکو جرم قرار دیا گیا۔۔۔۔
جہاد ایک عبادت تھی مگر اسکو فساد قرار دیا گیا۔۔۔۔۔
جہاد ایک ضرورت تھی مگر اسکو بے کار کیا گیا۔۔۔۔۔۔۔
جہاد نصرت کا دروازہ تھا جسے ہم نے خود بند کردیا۔۔۔۔
جہاد رحمت کی بارش تھی مگر چھتریاں تان لی گئ۔۔۔۔۔۔۔۔
جہاد شھادت کی راہ تھی جو بند کردی گئ۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جہاد عظمت کا نشان تھا جسے مٹادیا گیا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

 

علم

علم حاصل کرنا ہر مسلمان مرد اور عورت پر فرض ہے۔۔۔۔۔۔(رسول اللہ ص)
اللہ نے علم قلم سے سکھایا۔۔۔۔۔۔۔(قرآن مجید)
اے رب میرے علم میں اضافہ فرما۔۔۔۔۔۔۔۔۔(قرآن مجید)
پیدائش سے موت تک علم حاصل کرتے رہو۔۔۔۔۔۔۔۔(رسول اللہ ص)
علم حاصل کرو چاہے تمہیں چین تک جانا پڑے۔۔۔۔۔۔۔(رسول اللہ ص)
جو شخص علم حاصل کرنے کیلئے نکلا وہ واپسی تک اللہ کے راہ میں ہوتا ہے۔۔۔۔(رسول اللہ ص)
جو شخص طلب علم کے دوران مرگیا وہ شہید ہے۔۔۔۔۔۔۔۔(رسول اللہ ص)
علم جہاں دنیا کی جان ہے۔۔۔۔۔۔۔۔(مولانا روم رح)
علم وہی ہے جو تمہیں اللہ تک پہنچائے ورنہ تو وہ حجاب(پردہ) ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(حضرت سلطان باہو رح)
علم دل کیلئے باعث زندگی ہے۔۔۔۔۔۔۔۔(حضرت سلطان باہو رح)
علم کے ساتھ خوف خدا بھی ہو تو وہ تجھے فائدہ دیگا ورنہ نقصان۔۔۔۔۔۔۔۔۔(ابن عطاء رح)
ہم اللہ تعلی کی اس تقسیم پر خوش ہیں کہ ہمیں علم ملا اور جاہلوں کو دولت،مال تو عنقریب فنا ہوجائے گا اور علم لازوال ہے(حضرت علی رض)
علم کے ساتھ کامیابی حاصل کرو،صفہء ہستی پر ہمیشہ تمھارا نام رہے گا۔لوگ مرتے ہیں اہل علم نہیں مرتے۔۔۔۔۔۔۔۔(حضرت علی رض)
حکمت مؤمن کی گمشدہ متاع ہے جہاں ملے اسے اپنا ہی مال سمجھو۔۔۔۔۔۔۔۔

 

حیا اور شرم

بے شک حیا ایمان کا جز شاخ ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔(رسول اللہ ص)
حیا ایمان کی شاخ ہے۔۔۔۔۔۔۔۔(رسول اللہ ص)
حیا صرف خیر ہی کو لاتی ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(رسول اللہ ص)
اللہ سے ایسی حیا کرو جیسے اس سے کرنی چاہئے۔۔۔۔۔۔۔۔(رسول اللہ ص)
حیا کی حقیقت یہ ہے کہ دل میں ہیبت ہو اور اسکے ساتھ گزشتہ وحشت ہو(حضرت ذوالنون رح)
حیا اور ایمان ہمیشہ اکھٹے رہتے ہیں،جب ان دونوں میں سے کوئ ایک اٹھالیا جائے تو دوسرا بھی اٹھا لیا جاتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔(رسول اللہ ص)
جب تم حیا نہ کرو تو جو چاہے کرو۔۔۔۔۔۔۔۔(رسول اللہ ص)

بے حیا باش وہر چہ خواہی کن

ذکراللہ

اے ایمان والوں! اللہ کو بہت یاد کرو صبح شام اسکی پاکی بیان کرو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(قرآن مجید)
اور کثرت کے ساتھ اللہ کا ذکر کرو تاکہ تم فلاح پاؤ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(قرآن مجید)
میری یاد کیلئے نماز قائم کرو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔( قرآن مجید)
میرا بندہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔مکمل بندہ وہی ہے جو اپنے حریف مقابل سے جنگ کے وقت بھی مجھے یاد کرتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔(اللہ تعالی)
اور یقین کرو اللہ کا ذکر ہر چیز سے بذرگ تر ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(اللہ تعالی)
ہر شے کو چمکانے کیلئے پالش ہوتی ہے۔اگر دلوں کو صقیل کرنا چاہو تواللہ کے ذکر سے صقیل(پالش) کرو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(رسول اللہ ص)
میں اپنے ذکر کرنے والے کے ہم نشین رہتا ہوں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(اللہ تعالی)
ذکر سے غافل نہ ہو،وقت کو غنیمت سمجھو وقت پھر ہاتھ نہیں آتا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(سید حسین احمد مدنی رح)
اے ولی! ہر حال میں تجھ پر خدا کا ذکر کرنا لازم ہےاس واسطے کہ ذکر تمام نیکیوں کا جامع ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(شیخ عبدالقادر جیلانی رح)
حق تعالی کا ذکر تمام گناہوں کو غرق کردیتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(یحی بن معاذ رح)
ذکر سے مقصود اصلی اطمنان قلب اور اللہ کی محبت کا حاصل ہوتا ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔(کرامت علی جونپوری رح)

 

"اے ابنِ آدم”

 

ایک میری چاہت ہے ،ایک تیری چاہت ہے ،
تو ہوگا وہی جو میری چاہت ہے،
پس اگر تو نے سپرد کردیا اپنے آپ کو اسکے جو میری چاہت ہے ،
تو میں وہ بھی تمہیں دونگا جو تیری چاہت ہے ،
اگر تو نے مخالفت کی اسکی جو میری چاہت ہے ،
تو میں تمہیں تھکا دونگا اس میں جو تیری چاہت ہے ،

پھر ہوگا وہی جو میری چاہت ہے

 

دوست

دوست ایک سائے کے مانند ہے
کہ جب تک انسان روشنی میں رہے
سائہ انکا ساتھ دیتی ہے
اور جب وہ روشنی سے تاریک(اندھیرے) میں آجاتا ہے
سائہ انکا ساتھ چھوڑ دیتی ہے

 

دوست کو کنول کے پھول کی طرح ہونا چاہیے جو جوہڑ کے سوکھنے پر اسی میں مل جاتا ہے نہ کہ خوشنما پرندے کی طرح جو جوہڑ کے خشک ہونے پر اُڑ کر کہیں اور چلا جاتا ہے۔”

 

ف۔قدوسی آف لائن ہے  

 

Advertisements
 

2 Responses to “اقوالِ زریں”

  1. anjum iqbal Says:

    execellent work sir.
    GOD BLESS YOU.
    ALLAH ap ko aasaaniaan ata farmaay aor aassaniaan takseem karnay ka sharf day.AAMEEN
    I am a khaksar mureed of Hazrat Wasif Ali Wasif (Reh)
    Main hon aik bandaay baynawa
    Meray peer WASIFAY BASAFA
    Mera zikr bus hai ALI ALI
    Mera wird AHMADAY MUJTABA.

  2. sayed anis Says:

    Very nice and appreciable Allah aapko our himmat aata karein ameen!


جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

w

Connecting to %s